• A
  • A
  • A
وقت کا تقاضہ ہے کہ فلسطینی متحد ہو جائیں : حماس قائد

حماس کے سینئر قائد موسیٰ ابو مرزوق نے کہا کہ' فلسطینیوں کے لیے اس کے سوا کوئی راستہ نہیں بچا ہے کہ وہ تمام اختلافات کو ختم کرکے متحد ہو جائیں۔

علامتی تصویر


حماس کے سینئر قائد موسیٰ ابو مرزوق نے جمعہ کو کہا کہ حماس نے فلسطین مسئلے کے مصالحتی حل کے لیے ضرورت سے زیادہ کام کیا ہے۔


ال۔اقصی ٰ ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے حماس کے سینئر قائد موسیٰ ابو مرزوق نے کہا کہ' فلسطینیوں کے لیے اس کے سوا کوئی راستہ نہیں بچا ہے کہ وہ تمام اختلافات کو ختم کرکے متحد ہو جائیں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ' مصالحت وقت کا تقاضۃ ہے اور یہ قومی مفاد میں ہے۔
'
انہوں نے کہا کہ ' پرانے معاہدے کے مطابق حماس کو سرحد کی سلامتی کی فکر ہے،اس لیے اس مسئلے پر تبادلہ خیال ہونا ضروری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حماس نے الفتح کے سامنے مشترکہ سکیورٹی فورسیز کے قیام کے لیے تجویز رکھی تھی ، جسے مسترد کر دیا گیا۔ اس کے بعد حماس نے ملک کی سلامتی کے لیے مشترکہ سلامتی فورسیز کا خیلا ترک کر دیا اور پیش رفت کرتے ہوئے یہ ذمہ داری خود قبول کر لی ۔

انہوں نے محمود عباس کی پارٹی پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ الفتح مصالحت نہیں کرنا چاہا اور اس نے حماس کو کمزور کرنے کے لیے بہت سے تجربات کیے۔

ابو مرزوق نے الفتح سے سوال کرتے ہو ئے کہا کہ' فتح کی جانب سے نومبر یا دسمبر میں کیے جانے والا مصالحت کا وعدہ کہاں ہے؟

انہوں نے خاص مسئلہ کی نشاندہی کرتے ہوئے کہا کہ' فتح کو غزہ کے سرکاری ملازمین کو تنخواہ دینے چاہیے تھے لیکن اس نے ملازمین کے تنخوات ادا نہیں کیے ،اس لیے حماس نے اسے ادا کیا ہے۔



CLOSE COMMENT

ADD COMMENT

To read stories offline: Download Eenaduindia app.

SECTIONS:

  होम

  राज्य

  देश

  दुनिया

  क्राइम

  खेल

  मनोरंजन

  इंद्रधनुष

  सहेली

  गैलरी

  टूरिज़्म

  MAJOR CITIES