• A
  • A
  • A
بنگال: جنسی زیادتی سے متاثرہ لڑکی نے عدالت سے خودکشی کرنے کی اجازت مانگی

مغربی بنگال کے مدنا پور علاقے میں عصمت دری کی وجہ سے ہوئی حاملہ لڑکی نے اپنی زندگی ختم کرنے کے لیے عدالت سے اجازت طلب کی ہے۔

فائل فوٹو


اس کے ساتھ گاؤں کے ایک لڑکے نے شادی کا جھاسنہ دیکر کئی بار جنسی زیادتی کی۔


متاثرہ کی طرف سے عدالت کو دی گئ عرضی کی نقل پولیس کو موصول ہوئی ہےجس میں متاثرہ نے کورٹ سے اپنی زندگی کا خاتمہ کرنے کی اجازت طلب کی ہے۔

پولیس سٹیشن کے انچارج نے کہا کہ معاملے کی شکایت کے بعد سنیچر کو ملزم کے والد کو گرفتار کر لیا گیا ہے، تاہم دیگر افراد خانہ فرار ہیں۔ پولیس نے مزید کہا کہ ملزم اور اس والدین متاثرہ کے ساتھ ان کے لڑکے کی شادی کرنے کے لیے راضی تھے۔ اس لیے ان کی شکایت پر کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔

پولیس نے کہا: 'اس معاملے میں دونوں خاندانوں کے پڑوسیوں کی مداخلت کرنے کے بعد لڑکے کے گھر والے 16 نومبر کو شادی کرانے کے لیے راضی ہوگئے تھے۔ اس کے بعد وہ فرار ہوگئے۔ اب کچھ افراد ہی ان میں سے واپس لوٹے ہیں، دیگر افراد کی تلاش جاری ہے'۔

مغربی بنگال میں ریاستی انسانی حقوق کمیشن کی ٹیم 17 سالہ متاثرہ کے گھر جاکر متاثرہ اور اس کے والدین سے بات کی۔ بدنامی کے ڈر سے متاثرہ کی ماں نے بھی عدالت میں اپنے خاندان کی زندگی کو ختم کرنے کی اجازت مانگی تھی۔




CLOSE COMMENT

ADD COMMENT

To read stories offline: Download Eenaduindia app.

SECTIONS:

  होम

  राज्य

  देश

  दुनिया

  कारोबार

  क्राइम

  खेल

  मनोरंजन

  इंद्रधनुष

  सहेली

  गैलरी

  टूरिज़्म

  MAJOR CITIES