• A
  • A
  • A
فوج کشمیر میں افسپا جیسے قوانین کے تحت انسانیت کا خون کرتی ہے

بھارتی ریاست جموں و کشمیر کا علیحدگی پسند خیمہ مشترکہ مزاحمتی قیادت نے کہا کہ فوج ریاست میں افسپا اور دیگر متعدد قوانین کا فائدہ اٹھا رہی ہے۔

علامتی تصویر۔


علیحدگی پسند رہنما سید علی شاہ گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ قیادت (جے آر ایل) نے بدھ کو ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ریاست میں فوج افسپا کے تحت عام شہریوں کو ہلاک کرتی ہے جن میں بچے، خواتین، بزرگ، جوان سب شامل ہیں اور فوج جواب دہی، احتساب اور استغاثہ سے آزاد ہیں۔


انہوں نے بیان میں کہا کہ کشمیر میں ہر طبقہ خود کو ہراساں محسوس کررہا ہے، ان میں خوف ہے اور روزمرہ کی ہلاکتوں سے وہ اس قدر عاجز آچکے ہیں کہ انہیں امید کی اب کوئی کرن نظر نہیں آتی۔

رہنماؤں نے فوج پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں تعینات 8 لاکھ فوج کشمیر کے علاقوں پر قبضہ کیے ہوئے ہیں اور وہ اسے ایک ٹول کے طور پر استعمال کررہے ہیں یعنی اپنی مرضی اور اپنی سہولت کے مطابق پورے خطے کو استعمال کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا: 'ریاست میں فوجی کاروائیوں کے نام پر اپنے بنائے ہوئے قوانین کے تحت اب تک ایک لاکھ سے زائد کشمیری شہریوں کو ہلاک کیا گیا'۔

بیان میں مزید کہا گیا: 'عام شہریوں کی ہلاکت میں قصورواروں کے لیے کوئی قانون نہیں ہے۔ جس کے ذریعے ان کو قرار واقعی سزا دی جاسکے'۔

بیان کے مطابق اگرچہ متعدد مرتبہ برائے نام فوری تحقیقات کے احکامات بھی جاری کیے گئے۔ ان احکامات کو حالات پر قابو پانے اور عوام کا غصہ کم کرنے کے لیے ایک ہتھیار کے طور پر استعمال کیا گیا۔

بیان میں کہا گیا: 'بھارتی ذرائع ابلاغ کو ریاست میں جاری فوج کی جارحانہ کاروائیوں کی حفاظت کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اور دوسری طرف کشمیر میں شہریوں کے بنیادی حقوق سلب کیے جاتے ہیں اور انہیں گولیوں کا نشانہ بنایا جاتا ہے'۔

انہوں نے کہا: ایسی صورتحال میں ہلاک کیے گئے نوجوانوں کے لیے کسی انصاف کی توقع سراب کی طرح ہے'۔

بیان کے مطابق کشمیری عوام کی سیاسی جدوجہد ان کی تقدیر کا فیصلہ حق خود ارادیت ہے جو عالمی اصولوں پر مبنی ہے۔

انہوں نے کہا: 'کسی بھی طرح کی ناانصافی، طاقت اور جارحیت کا استعمال کرکے عوام کو اپنا حق مانگنے سے دور نہیں کرسکتا۔ بلکہ اس سے تحریک مزید مظبوط ہورہی ہے'۔

بیان میں کہا گیا: 'کشمیر مسئلے کا منصفانہ حل بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ معیاروں کے مطابق، خطے میں قیام امن کو یقینی بنانے اور ہلاکتوں کا سلسلہ بند کرنے میں ہے'۔



CLOSE COMMENT

ADD COMMENT

To read stories offline: Download Eenaduindia app.

SECTIONS:

  होम

  राज्य

  देश

  दुनिया

  क्राइम

  खेल

  मनोरंजन

  इंद्रधनुष

  सहेली

  गैलरी

  टूरिज़्म

  اردو خبریں

  ଓଡିଆ ନ୍ୟୁଜ

  ગુજરાતી ન્યૂઝ

  MAJOR CITIES